آج کی رات برسیگا رات بھر


آج کی رات برسیگا رات بھر

اشک نظروں سے بہیگا رات بھر

 

جدائی کے ہاتھ میں خنجر ہوگا

میرا سینہ چھلنی ہوگا رات بھر

 

بےخودی دل میں رہیگی میزبانی میں

درد مہمان بن رہیگا رات بھر

 

جس نے ٹھکرایا ہمیں زمانے میں

آج وہ یاد آئیگا رات بھر

اردو شاعری

Advertisements

कमेंट्स यहां लिखें-

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s