اردو شاعری-آگ لگی ہے روح کے دھاگے میں


ایک سلسلہ سا چل رہا ہے

دل آنسؤں میں غل رہا ہے

 

کبھی جھانک کر دیکھا اپنے اندر

ہر طرف وہاں کچھ جل رہا ہے

 

آگ لگی ہے روح کے دھاگے میں

جسم موم سا پگھل رہا ہے

 

بہت صاف ہے من کا آئینہ

آنسؤں سے جب وہ دھل رہا ہے

عشق اور بندگی کے آنسو ہیں

جو محبت میں درد پاتے ہیں

Advertisements

Leave a Reply